Advertisements

Marriage of Dost Muhammad Khosa & Actress Sapna

-->

Dost Muhammad Khosa who married with Sapna in June 2010, divorced her in June 2011 and now sapna is kidnapped, her family blames Khosa and case is in court but lawyer of Khosa says its totally fake. Khosa is not involved in this kidnapping.
sapna-dost-khosa

اپنی ہی بیوی کے اغواء میں لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شیخ عظمت سعید کی عدالت کو مطلوب سابق وزیرِاعلیٰ پنجاب دوست محمد کھوسہ کی طرف سے 16نومبر کو ان کی جگہ ان کے وکیل نے پیش ہوتے ہوئے عدالت میں اقرار کیا ہے کہ دوست محمد کھوسہ نے سپناسے 2جون 2010کو شادی کی اور19جون 2011کو سپنا خان کو طلاق دے دی تھی۔اورکیس کی مدعیہ اداکارہ سپنا کی بڑی بہن حناخان کے وکیل اور جوڈیشل ایکٹوزم پینل کے محمد اظہر صدیق متاثرہ فریق نہیں ہیں۔
اسی موقف کی بنا ء پر سیشن کورٹ نے دوست محمد کھوسہ اور سپنا کی شادی کو اخباری خبر قرار دیتے ہوئے 7ستمبر2011کو سپنا کی بہن حناخان کی دوسری درخواست خارج کر دی تھی۔
تفصیلات کے مطابق دوست محمد کھوسہ کے وکیل زبیر خالد چوہدری نے عدالت میں دوست محمد کھوسہ کی طرف سے موقف اختیار کیا ہے کہ سپناخان کی شادی دوست محمد کھوسہ سے گرین ٹاؤن لاہور میں سپنا خان کی رہائش گاہ پر ہوئی تھی اور سپنا خان سے 28فروری 2011کودوست محمد کھوسہ ایک بیٹی کے باپ بھی بنے جس کانام بعد میں مہ گل رکھا گیا۔
_________________________________
شادیاں اور تشدد، دوست کھوسہ حمزہ سے بھی نمبر لے گئے
_________________________________
مہ گل کی پیدائش ،سپنا سے شادی کا سرٹیفیکیٹ اورطلاق کے قانونی کاغذات پیش کرتے ہوئے دوست محمد کھوسہ کے وکیل نے کمرہ عدالت میں کہا کہ میرے موکل نے سپنا کو طلاق دے دی ہے اور اب سپنا کا ان سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
ٹاپ سٹوری آن لائن ڈاٹ کام کو ملنے والی اس کیس کی عدالتی دستاویز ات کے مطابق یہ شادی 2جون2010کو ہوئی اور طلاق 11اکتوبر 2011کو موء ثر ہوئی۔
سئنیرصوبائی وزیر پنجاب سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ کے فرزند اور صوبائی وزیر دوست محمد کھوسہ کی طرف سے عدالت میں جمع کروائے گئے طلاق نامہ پر بطور گواہ داؤ دبٹ کے بیٹے شہیر داؤد بٹ نے دستخط کئے جبکہ دوسرے گواہ کے طور پر دستخط مختار مائی زیادتی کیس میں مجرمان کے وکیل ملک محمد سلیم کے برادر نسبتی اور پاکستان مسلم لیگ(ن)کی ٹکٹ پر ڈیرہ غازی خان کی مخصوص نشت سے بنائی جانے والی سابقہ MPAاور مسلم لیگ (ن) کی ٹکٹ پر ہی بنائے جانے والی موجودہ ممبر قومی اسمبلی شہناز سلیم ملک کے چھوٹے بھائی ملک محمد فہیم امجد نے کئے ہیں۔
وزیر بلدیات پنجاب دوست محمد کھوسہ کے وکیل نے سیکریٹری یونین کونسل نمبر140گرین ٹاؤن کی طرف سے جاری کردہ طلاق مؤثرہونے کا جوسرٹیفیکیٹ عدالت میں پیش کیا ہے اس کے مطابق سپنا کو طلاق11اکتوبر2011کو ہوئی۔جبکہ جوڈیشل ایکٹوزم پینل کی جانب سے سپنا خان کی بازیابی کے لئے دائر کی گئی پہلی درخواست ایڈیشنل اینڈ سیشن جج لاہور نذیر احمد نے جوڈیشل ایکٹوزم پینل کو متاثرہ فریق نہ مانتے ہوئے 16جولائی کو خارج کی تھی۔
کیس کی مدعیہ حنا خان نے ٹاپ سٹوری آن لائن سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم لاہور میں شروع دن سے جوہر ٹاؤن کے رہائشی ہیں ہم نے کبھی گرین ٹاؤن میں رہائش اختیار نہیں کی ۔سپنا بھی ہمیشہ ہم بہن بھائیوں کے ساتھ ہی رہی اور دوست محمد کھوسہ کے تمام دستاویزات سراسر غلط اور جھوٹ پر مبنی ہیں۔جبکہ ان کے وکیل محمد اظہر صدیق کا کہنا ہے کہ دوست محمد کھوسہ کے وکیل نے کمرہ عدالت میں طلاق کا ٹھوس بنیادوں پر ذکر نہیں کیا۔لہٰذا اس کیس کی سماعت جلد سے جلد کی جائے کیونکہ یہ انسانی جان کا مسئلہ ہے اور پاکستان کے ہر شہری کی حفاظت کرنے کی ذمہ داری حکومتِ وقت اور عدالتوں پر عائد ہوتی ہے۔
سپنا کے بڑے بھائی محمد امین خان کا کہنا تھا کہ جس میڈیا نے عدلیہ بحالی تحریک میں سب سے اہم کردار ادا کیا اُسی میڈیاکی خبروں کوآج عدالتیں ماننے سے انکار کر رہی ہیں ۔ایسی صورتحال میں ہم اپنی بہن کو زندہ سلامت بازیاب کروانے کے لئے کس کا دروازہ کھٹکھٹائیں۔
لاہور ہائی کورٹ کے موجودہ چیف جسٹس اعجاز محمد چوہدری کی ریٹائرمنٹ کے بعدجسٹس افتخار محمد چوہدری (چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان)کی طرف سے نامزد چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ اور سپناخان بازیابی کیس کے جج جسٹس شیخ عظمت سعیدنے زیبا خان کے وکیل محمد اظہر صدیق کو دوست محمد کھوسہ کے جواب پر عدالت میں جواب دینے کے لئے 28نومبر تک کیس کی کاروائی ملتوی کر دی ہے۔

© 2014 Just Scandals. All rights reserved.
Geo News | Funny Images .
WordPress Themes
freshlife WordPress Themes Theme Junkie